تڑی

اسٹیبلشمنٹ  کا ڈیزل اور عوامی پیٹرول

دور اندیش تجزیہ نگار کہتے ہیں کہ مولانا فضل الرحمان، عمران خان کی ’دوٹکیاں دی نوکری‘ کے خاتمے کے لیے کسی پِری پلان منصوبے پر کام کر رہے ہیں۔ دوسری طرف تڑیاں دینے سے لگتا ہے کہ سادہ لوح عمران خان بھی اپنی نوکری پکی سمجھ بیٹھے ہیں۔