سعادت حسن منٹو

زاویہ

آصف محمود آج پھر عمران خان

آپ عمران خان سے اختلاف کر سکتے ہیں اور شدت کی آخری حد تک، لیکن اس بات کا انکار نہیں کر سکتے کہ اس وقت عصری سیاست کی رگ جاں ان کے ہاتھ میں ہے۔

منٹو کی سکینہ اور ہماری شلوار

 منٹو کے افسانے میں شلوار سرکنے پر باپ خوشی سے چلایا تھا کہ سکینہ زندہ ہے۔ کشمور میں شلوار سرکنے پر ماں غم سے چلائی کہ ’میری بچی مر گئی ہے۔‘ یہ معاشرہ مرگیا ہے۔