نصاب

پاکستان

تین سو سے زائد نصابی کتابیں ’ممکنہ انتہاپسند مواد سے پاک‘

متحدہ علما بورڈ کی جانب سے نصابی کتب کے مواد کا جائزہ لیا جو حکومت کی طرف سے پہلی تا پانچویں جماعت کے لیے شائع کی گئی تھیں۔ سیالکوٹ واقعے کے بعد وزیر اعظم پاکستان نے ایسے واقعات کے خلاف زیرو ٹالرنس اور جامع حکمت عملی ترتیب دینے کا اعلان کیا تھا۔

'بین کتابیں دو قومی نظریے سے متصادم تو پابندی پنجاب میں کیوں؟'

پرائیویٹ سکولز فیڈریشن پاکستان نے  سوال اٹھایاہے کہ اگر کتابوں میں مواد قابل اعتراض تھا تو اتنے سالوں تک ایکشن کیوں نہیں ہوا؟ دوسرایہ کہ اگر ان میں مواد دو قومی نظریہ سے متصادم ہے تو دیگر صوبوں میں کارروائی کیوں نہیں ہوئی؟