آصف کو بلا کیوں مارا تھا؟ شعیب اختر سے سوال

سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے ٹوئٹر پر اپنے مداحوں کے ساتھ سوال جواب کی ایک ’نشست‘ رکھی، جس کے دوران دلچسپ تبصرے سننے کو ملے اور بہت سے انکشافات بھی ہوئے۔

2007 میں جنوبی افریقہ میں کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے دوران جوہانسبرگ میں پریکٹس کے بعد شعیب اختر اور محمد آصف کی ڈریسنگ روم میں کسی بات پر تلخ کلامی ہو گئی تھی جس پر شعیب نے طیش میں آ کر آصف کی ٹانگ پر بلا دے مارا تھا۔ (فائل تصویر: روئٹرز)

سلیبرٹیز کی جانب سے اپنے مداحوں کو خود سے سوالات کرنے کا موقع دینے کا رجحان زور پکڑتا جا رہا ہے۔ پاکستان کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے بھی گذشتہ روز ٹوئٹر پر اپنے فالورز کے ساتھ سوال جواب کی ایک ’نشست‘ رکھی، جس کے دوران بہت سے دلچسپ تبصرے سننے کو ملے اور بہت سے انکشافات بھی ہوئے۔

ہفتے کی شب تقریباً تین بجے شعیب نے ایک ٹویٹ کی جس میں انہوں نے لکھا: ’چلیں 15 منٹ کے لیے سوال و جواب کی نشست رکھتے ہیں۔‘

بس پھر کیا تھا، ہیش ٹیگ ’آسک شعیب اختر‘ کے ساتھ صارفین نے ماضی میں دنیا کے تیز ترین بولر پر سوالات کی بوجھاڑ کر دی۔

عباس نامی صارف نے شعیب کو ان کے دوسرے بیٹے کی ولادت پر مبارک باد دینے کے بعد چھوٹتے ہی پوچھا کہ کرکٹ میں ان کے سب سے یاد گار اور ناقابلِ فراموش لمحات کون سے ہیں؟ جس کے جواب میں شعیب اختر نے کہا: ’ٹنڈولکر کی وکٹ اور کلکتہ ٹیسٹ۔‘

ندیم خان نے باؤنسر کراتے ہوئے شعیب پر سوال داغ دیا کہ انہوں نے آصف کو بلا کیوں مارا تھا؟ جس پر دفاعی پوزیشن لیتے ہوئے شعیب نے جواب دیا: ’آصف سے پوچھنا کبھی۔‘

2007 میں جنوبی افریقہ میں کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے دوران جوہانسبرگ میں پریکٹس کے بعد شعیب اختر اور محمد آصف کی ڈریسنگ روم میں کسی بات پر تلخ کلامی ہو گئی تھی جس پر شعیب نے طیش میں آ کر آصف کی ٹانگ پر بلا دے مارا تھا، جس سے وہ معمولی زخمی ہوگئے تھے۔ دو کھلاڑیوں کی یہ جھڑپ پوری دنیا کے میڈیا کی سرخی بن گئی تھی تاہم اس لڑائی کی اصل وجہ کا آج تک پتہ نہیں چل سکا۔

معارج نامی ایک صارف نے جب شعیب اختر سے محمد حفیظ کے اس بیان پر کہ ’بابر اعظم کو کپتانی کی ذمہ داری سونپنے سے ان کی بلے بازی متاثر نہیں ہوگی‘، پر تبصرہ کرنے کو کہا تو شعیب کا کہنا تھا کہ ’مجھے امید ہے کہ ان (حفیظ) کا اندازہ درست ہو۔‘

سید سبان کریم نامی صارف نے جب شعیب سے پوچھا کہ وہ سیاست میں کیوں آ رہے ہیں؟ تو انہوں نے اس کی تردید کرتے ہوئے اسے ایک ’افواہ‘ قرار دیا۔

سید سلیمان علی شاہ نے جب ان سے پوچھا کہ موجودہ کھلاڑیوں میں سب سے پسندیدہ بولر کون ہے تو شعیب اختر نے کہا ’ویراٹ کوہلی۔‘

اس پر صارفین نے ان کا خوب مذاق بنایا اور سہیل نامی صارف نے اس جواب پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا: ’بھائی کون سا مال پھُونکا ہے مجھے بھی بتاؤ، نیند نہیں آ رہی۔‘

اگرچہ کوہلی اپنی بیٹنگ کی وجہ سے مشہور ہیں تاہم بطور بولر بھی انہوں نے ایسا کارنامہ انجام دیا ہے جس کی تاریخ میں نظیر نہیں ملتی۔ 2011 میں ایک وائڈ بال پر کیون پیٹرسن کی وکٹ حاصل کرکے وہ صفر بال پر وکٹ لینے والے پہلے بولر بن گئے تھے۔

زیادہ پڑھی جانے والی سوشل