پاکستانی بلائنڈ کرکٹ ٹیم انڈین ویزا نہ ملنے پر ورلڈ کپ میں شرکت سے محروم

بلائنڈ کرکٹ کونسل نے کہا کہ پاکستان کے کھلاڑیوں کے لیے مایوس کن بات ہے کیوں کہ اُنہوں نے اس ورلڈ کپ کے لیے انتھک محنت کی تھی۔

پاکستان کی بلائنڈ کرکٹ ٹیم کے کپتان نصر علی، اپنے بنگلہ دیشی اور نیپالی ہم منصب تنجیل الرحمن اور کپتام شرستھا کے ساتھ 6 جنوری 2018 کو لاہور میں ایک تقریب کے دوران ورلڈ کپ ٹرافی اٹھائے ہویے ہیں (اے ایف پی)

پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل نے منگل کو کہا ہے کہ انڈیا نے پاکستانی ٹیم کو ویزا دینے سے انکار کر دیا ہے جس کے بعد پاکستان کی بلائنڈ کرکٹ ٹیم ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں شرکت نہیں کر سکے گی۔

بلائنڈ کرکٹ ورلڈ کپ پانچ دسمبر سے انڈیا میں شروع ہو چکا ہے اور یہ 17 دسمبر تک جاری رہے گا۔

کونسل نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’بھارت نے پاکستان بلائنڈ کرکٹ ٹیم کو ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کرکٹ آف دی بلائنڈ میں شرکت کے لیے ویزا دینے سے انکار کر دیا ہے۔‘

’پاکستان ورلڈ کپ جیتنے کا سنجیدہ دعویدار تھا اور یہ ہمارے کھلاڑیوں کے لیے واقعی مایوس کن ہے جنہوں نے اس ورلڈ کپ کے لیے انتھک محنت کی تھی۔‘

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

انڈیا کی طرف سے تاحال اس بارے میں کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

بلائنڈ کرکٹ کونسل نے ایک بیان میں کہا کہ پاکستان اس سے قبل ٹی ٹوئنی کرکٹ ٹورنامنٹ میں رنر اپ رہ چکا ہے اور اس مرتبہ بھی اس بات کے قوی امکانات تھے کہ فائنل میں پاکستان اور انڈیا کی ٹیمیں مد مقابل ہوتیں۔ کونسل نے کہا کہ’ورلڈ کپ جیتنے کے پاکستان کے امکانات زیادہ تھے۔‘

کونسل نے بیان میں کہا کہ انڈیا کی بلائنڈ کرکٹ ایسوسی ایشن نے اپنی حکومت سے یہ کہا تھا کہ پاکستانی ٹیم کو ویزا جاری کر دیا جائے لیکن اُن کے اس موقف کو نہیں سنا گیا۔

پاکستان اور انڈیا کے کشیدہ سیاسی تعلقات کے کھیل پر بھی منفی اثرات پڑے ہیں اور دونوں ملکوں میں مقبول کھیل کرکٹ اس سے بری طرح متاثر ہوا ہے کیوں کہ جنوبی ایشیا میں پڑوسی ممالک کے ٹیمیں ایک دوسرے کے ملک میں کھیلنے کے لیے نہیں جاتیں اور ان کا مقابلہ حالیہ برسوں میں بین الاقوامی مقابلوں میں کسی تیسرے ملک کی سرزمین پر ہی ہوا ہے۔

زیادہ پڑھی جانے والی کرکٹ