کیمرے کے سامنے شوٹنگ کرنا مشکل کام ہے: پورن سٹار

اپنے تجربے کے باوجود اب میسینا کا خیال ہے کہ کیمرے کے سامنے جنسی عمل کچھ اچھا نہیں ہے۔ اس میں تفریح نہیں ہوتی اور یہ بہت تکلیف دہ بھی ہو سکتا ہے۔

35 سالہ میڈیسن میسینا ایک مشہور پورن سٹار ہیں۔ وہ گذشتہ 18 سال سے انڈسٹری میں کام کر رہی ہیں اور 2012 کے بعد دو سو سے زیادہ فلمیں کر چکی ہیں۔(سوشل میڈیا)

انٹرنیٹ کے دور میں یہ کہنا شاید بجا ہوگا کہ زیادہ تر بالغ افراد اب  تک اپنے حصے کی خاصی پورنوگرافی دیکھ چکے ہیں۔

لوگ اتنی زیادہ پورن فلمیں دیکھتے ہیں کہ سائنس دان یہ تجربات کرنے کے قائل ہو گئے ہیں کہ ان فلموں کے مردوں اور خواتین پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

پورن کلپس دیکھتے ہوئے ہو سکتا ہے کہ آپ نے کبھی سوچا ہو کہ پورن فلم سازی اس کے اداکاروں کے لیے کیسی ہوتی ہو گی جو کیمرے کے سامنے پرفارم کرنے کے لیے قربت کے لمحات کی وہ عکس بندی کرواتے ہیں جیسے کوئی عام انسان کبھی نہیں کروا سکتا۔

35 سالہ میڈیسن میسینا ایک مشہور پورن سٹار ہیں۔ وہ گذشتہ 18 سال سے انڈسٹری میں کام کر رہی ہیں اور 2012 کے بعد دو سو سے زیادہ فلمیں کر چکی ہیں۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

میسینا کا خیال ہے کہ کیمرے کے سامنے جنسی عمل کچھ اچھا نہیں ہے۔ اس میں تفریح نہیں ہوتی اور یہ بہت تکلیف دہ بھی ہو سکتا ہے۔

سابق ’پورن سٹار آف دی ایئر‘ میسینا نے ویب سائیٹ news.com.au کے ساتھ بات چیت میں بتایا ہے کہ سیکس انڈسٹری میں زندگی کیسی ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا ’یہ بڑی روکھی پھیکی ہوتی ہے۔ یہ اس عنصر سے بالکل خالی ہوتی ہے جو کسی جسمانی قربت کو دلچسپ بناتا ہے۔‘

’فلم کی ریکارڈنگ سے پہلے ہمارے درمیان بہت زیادہ تبادلہ خیال ہوتا ہے تاکہ فلم بند کیے جانے والے مناظر کو کیمرے کے لیے اچھا بنایا جا سکے۔ یہ عمل بڑا الجھا ہوا اور تکلیف دہ ہوتا ہے۔ جو بدترین سیکس میں نے کیا وہ پورن فلم کے لیے بنائے گئے سیٹ پر تھا۔‘

آسٹریلوی پورن سٹار نے مزید کہا ہے کہ وہ پوزیشنیں اور زاویے جو پورن سٹار کو فلم کی تیاری کے دوران بنانے پڑتے ہیں وہ معمول سے ہٹ کر ہوتے ہیں اور جسم کے اندرونی حصوں کے لیے خاصے تکلیف دہ ہو سکتے ہیں۔

اس حوالے سے واقعی کچھ سنجیدہ نوعیت کی تفصیلات بھی ہیں جیسا کہ فلم بندی کے دوران بیضہ دانی میں موجود گلٹیوں کا پھٹ جانا۔ تاہم بڑے مسائل میں ایک مسئلہ مناظر کے درمیان کٹ کہنے کا عمل ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’بہت سے لوگوں کو یہ جان کر دھچکہ لگے گا کہ ہم سیکس کے مناظر ریکارڈ کروانے کی ریہرسل کے لیے پورن تصویریں بنواتے ہیں۔ فوٹو شوٹ کے دوران جب ہم ایک پوز سے دوسرا پوز بناتے ہیں تو سب سے زیادہ پسندیدہ پوز کے لیے عام طور پر جسم کی اچھی خاصی بازی گری ہو سکتی ہے۔‘

’جو پورن جو ہمیں سب سے زیادہ ناپسند ہے وہ ایسا ہوتا ہے جس میں ریکارڈنگ کے دوران کئی بار کٹ کروایا جائے۔‘

’فلم بندی کے دوران ایک منظر پر اس وقت کٹ کہا جاتا ہے جب مرد پارٹنر منظر مکمل کروانے کے قابل نہیں رہتا اور ایسا بہت دفعہ ہوتا ہے۔‘

’ان مردوں کے معاملے میں یہ صورت حال بڑی مزاحیہ ہے جو میرا انتخاب کرتے ہیں۔ وہ اکثر کہتے ہیں کہ انہیں امید ہوتی ہے کہ وہ اتنے ہی اچھے ہیں جیسے پورن فلموں کے دوسرے مرد، لیکن ان فلموں میں کام کرنے والے تمام مرد اداکار ویاگرا استعمال کرتے ہیں۔‘

میسینا سیکس ورکر کے طور پر بھی کام کرتی ہیں۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ ان کا مستقبل ایک ایسے دور میں داخل ہو گیا ہے کہ وہ پارٹنرز کے طور ایک حقیقی تعلق قائم کریں اور اپنے کام کو صرف ایک اضافی فائدے کے طور پر دیکھیں۔

انہیں اپنے کام کے معاملے میں کوئی تاسف نہیں ہے اور انہوں نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اسے جاری رکھیں اور لطف اٹھائیں۔

’مجھے پورن انڈسٹری اور اس کے انسانی پہلو سے پیار ہے اور میں بہت خوش قسمت ہوں کہ مجھے غیرمعمولی زندگی اور پرلطف تجربات سے گزرنے کا موقع ملا ہے۔‘

’یہ بڑی پرجوش صورت حال ہے۔‘

 

© The Independent

زیادہ پڑھی جانے والی فلم