ٹیلر نے نیوزی لینڈ کی بنگلہ دیش کے خلاف فتح پر مہر ثبت کر دی

نیوزی لینڈ کے 112 ویں اور آخری ٹیسٹ کھیلنے والے بزرگ کھلاڑی 37 سالہ ٹیلر کی آخر میں زبردست باولنگ تھی۔

نیوزی لینڈ کے راس ٹیلر 11 جنوری 2022 کو کرائسٹ چرچ میں نیوزی لینڈ اور بنگلہ دیش کے درمیان دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے پہلے دن چائے کے وقفے کے بعد میدان میں جانے سے قبل ساتھیوں کے ساتھ ہڈل کر رہے ہیں (اے ایف پی)

نیوزی لینڈ نے بنگلہ دیش کے خلاف دوسرا ٹیسٹ ایک اننگز اور 117 رنز کی برتری سے جیت لیا۔ راس ٹیلر نے منگل کو کرائسٹ چرچ میں آخری وکٹ حاصل کر کے دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کو برابر کر دیا۔

لٹن داس نے بنگلہ دیش کے لیے 111 گیندوں پر 102 رنز بنائے لیکن بنگالی ٹیم اپنی دوسری اننگز میں 278 رنز پر آؤٹ ہونے کے بعد 385 رنز پیچھے ہونے کے بعد کہیں بھی اچھے ٹوٹل کے قریب نہیں تھی۔

ٹاپ آرڈر نے تین وکٹوں کے نقصان پر 123 رنز تک پہنچنے میں بہت محنت کی جبکہ لٹن نے نورالحسن کے ساتھ چھٹی وکٹ کے لیے سنچری پر مبنی شراکت قائم کی۔ لیکن آخری بلے باز زیادہ مزاحمت نہیں کرسکے اور یوں عالمی ٹیسٹ چیمپئن نیوزی لینڈ نے پہلے ٹیسٹ میں جامع طور پر آٹھ وکٹوں سے شکست کھانے کے بعد انتہائی ضروری جیت حاصل کی۔

نیوزی لینڈ کے 112 ویں اور آخری ٹیسٹ کھیلنے والے بزرگ کھلاڑی 37 سالہ ٹیلر نے آخر میں زبردست بولنگ کی۔ انہوں نے آخری وکٹ حاصل کی جب عبادت حسین چار رنز بنا کر ٹام لیتھم کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

یہ ٹیلر کے لیے مناسب الوداع تھا، جو نیوزی لینڈ کے ریڈ بال کرکٹ  میں ریکارڈ 7683 رنز کے ساتھ کھیل کے سب سے زیادہ رنز بنانے والوں کی آل ٹائم فہرست میں 37 ویں نمبر پر رہے۔

بنگلہ دیش اپنی دوسری اننگز میں نیل ویگنر کے باؤنس سے مرعوب ہو گیا جس نے 77 رنز کے عوض تین وکٹ لیں جبکہ کائل جیمیسن نے 82 رنز کے عوض چار وکٹیں حاصل کی۔

لیکن جیت کی بنیاد کپتان لیتھم نے اپنے 252 رنز کے ساتھ رکھی اور نیوزی لینڈ نے پہلی اننگز میں چھ وکٹ پر 521 رنز بنائے۔

بنگلہ دیش کے گیند باز ٹاس جیت کر نیوزی لینڈ کو بلے بازی پر مجبور کرنے کے بعد گرین وکٹ کا فائدہ اٹھانے میں ناکام رہے اور جب بنگلہ دیش نے نیوزی لینڈ کی پیس جوڑی ٹرینٹ بولٹ اور ٹم ساؤتھی کو بیٹنگ کرتے ہوئے دیکھا کہ حالات کو کس طرح استعمال کرنا ہے۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

سوئنگ اور سیم کے سامنے آنے کے بعد اننگز 126 رنز پر 41.2 اوورز میں ختم ہوگئی اور بولٹ نے 43 رنز کے عوض پانچ اور ساؤتھی نے 28 رنز کے عوض تین وکٹیں حاصل کیں۔

جب بنگلہ دیش کو دوبارہ بیٹنگ کے لیے بھیجا گیا تو نیوزی لینڈ نے اپنے بولنگ آرمری میں تیسرا ہتھیار شارٹ بال سپیشلسٹ ویگنر تیار کیا۔

جیمیسن نے شادمان اسلام (21) کو ہٹانے کے بعد ویگنر نے ایکشن میں حصہ لیا اور نجم الحسین شانتو (29) کی شارٹ گیند پر فائن لیگ باؤنڈری پر بولٹ کے ہاتھوں کیچ ہوئے۔

ڈیبیو کرنے والے محمد نعمت نے ساؤتھی کا شکار ہونے سے پہلے 98 گیندوں پر 24 رنز کی محتاط کوشش کی اور پھر ویگنر ایکشن میں واپس آ گئے۔

کپتان مومن الحق 37 رنز تک پہنچ چکے تھے جب ویگنر نے فل گیند پر پہلی سلپ میں ٹیلر کے ہاتھوں انہیں آوٹ کیا۔

پہلی اننگز میں 55 رنز بنانے والے یاسر علی دو رنز پر تھے جب انہوں نے ویگنر کی بڑھتی ہوئی گیند کو روکا لیکن وہ دوسری سلپ میں لیتھم کی طرف چلی گئی۔

جیمیسن کرائسٹ چرچ میں پچھلے ہارے ہوئے میچ کے مقابلے میں بہت زیادہ تیز تھے۔ انہوں نے مہدی حسن، لٹن اور شادمان کی وکٹ حاصل کی۔

زیادہ پڑھی جانے والی کرکٹ