عمران خان کو دیکھ کر تو میں نے کرکٹ شروع کی: اظہر محمود

پاکستان کی جانب سے 21 ٹیسٹ میچوں میں 900 رنز اور 39 وکٹیں حاصل کرنے والے اظہر  نے عمران خان کے ہمراہ اپنی ڈریم جوڑی بنانے کی خواہش ظاہر کی ۔'عمران خان  کو دیکھ کر ہی تو میں نے کرکٹ کھیلنے کا آغاز کیا۔ وہ میرےپسندیدہ کرکٹر اور ہیرو تھے ۔'

اظہر محمود اور عبدالرزاق پاکستان کے عمدہ آل راؤنڈزمیں سے شمار ہوتے ہیں (اے ایف پی)

سابق آل راؤنڈرز اظہر محمود اور عبدالرزا ق نے ماضی کے عظیم کھلاڑیوں میں سےایک اور سابق کپتان عمران خان کو اپنا ڈریم پیئر منتخب کیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ  (پی سی بی) کی سوشل میڈیا پر جاری ڈریم پیئر مہم کو مداحوں، سابقہ اور موجودہ کھلاڑیوں سمیت صحافیوں اور کرکٹ پنڈتوں کی جانب سے خوب پذیرائی مل رہی ہے۔

پاکستان کی جانب سے 21 ٹیسٹ میچوں میں 900 رنز اور 39 وکٹیں حاصل کرنے والے اظہر  نے عمران خان کے ہمراہ اپنی ڈریم جوڑی بنانے کی خواہش ظاہر کی ۔'عمران خان  کو دیکھ کر ہی تو میں نے کرکٹ کھیلنے کا آغاز کیا۔ وہ میرےپسندیدہ کرکٹر اور ہیرو تھے ۔'

1997 میں اپنے ٹیسٹ ڈیبیو کی پہلی اننگز میں جنوبی افریقہ کے  خلاف ناقابل شکست سنچری اور دوسری اننگز میں ناقابل شکست نصف سنچری سکور کرکے پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ حاصل کرنے والے اظہر  نے عصر حاضر کے کرکٹرز میں سے بابراعظم کےساتھ بیٹنگ اور شاہین شاہ آفریدی کے ہمراہ بولنگ جوڑی بنانے کی خواہش کا اظہار کیا۔

دوسری جانب، موہالی ٹیسٹ 2005 میں بھارت کے خلاف 346 منٹ کریز پر کھڑے رہ کر پاکستان کو یقینی شکست سے بچانے والے عبدالرزاق نے بھی  عمران خان کے ہمراہ بولنگ کی خواہش کا اظہار کیا۔

46 ٹیسٹ میچوں میں 1946 رنز اور 100 وکٹیں حاصل کرنے والے عبدالرزاق نے میدان میں بیٹنگ کے لیے سابق کپتان جاوید میانداد کو اپنے ڈریم پیئر میں شامل کرنے کی خواہش ظاہر کی۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

انہوں نے کہا کہ وہ اپنے کرکٹ کیرئیر کے دوران  بڑے نامی گرامی کھلاڑیوں کے ساتھ کرکٹ کھیلنے پر فخر محسوس کرتے ہیں تاہم ان کا خواب تھا کہ وہ عمران خان کے ہمراہ بولنگ کرسکیں۔ 'میں چاہتا تھا کہ گراؤنڈ کے ایک اینڈ سے میں اور دوسرے اینڈ سے عمران خان بولنگ کررہے ہوں۔ '

انہوں نے کہا کہ وہ بیٹنگ میں جاوید میانداد کے ساتھ بیٹنگ کرنے کا خواب سجاتے تھے۔

پی سی بی نے اس سرگرمی کے ذریعے مداحوں کو مختلف ادوار میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والے اپنے پسندیدہ بلے بازوں اور بولرز کو جوڑیوں کی شکل دینے کا موقع فراہم کیا ہے۔ یہاں آل راؤنڈر کے چناؤ سے قبل سپنرز، فاسٹ بولرز، اوپنرز اور مڈل آرڈر بلے بازوں کی جوڑیوں پر مشتمل مہم کو زبردست پذیرائی ملی چکی ہے۔

اس دوران اوپنرز کی مہم میں 1990 کی دہائی کے عظیم کرکٹرز سعید انور اور عامر سہیل پر مشتمل جوڑی مقبول ترین  رہی۔ اس مہم میں سعید انور اور ماجد خان کو دوسری مقبول ترین جوڑی کا درجہ ملا۔

مڈل آرڈر بلے بازوں کے ڈریم پیئرز میں یونس خان اور محمد یوسف سب سے مقبول جوڑی رہی جبکہ سابق کپتان  انضمام الحق اور محمد یوسف کی جوڑی اس فہرست میں دوسرے نمبر پر رہی۔

فاسٹ بولرز کے ڈریم پیئرز میں ٹوڈبلیوز کی جوڑی نے مقبولیت کے  تمام گذشتہ ریکارڈز توڑے۔ وسیم اکرم اور محمد  آصف کی تصوراتی جوڑی اس فہرست میں دسرے نمبر پر رہی۔

سپنرز میں جادوگرسپنر اور گگلی ماسٹر مرحوم عبدالقادر اور دوسرا کے موجد ثقلین مشتاق کی تصوراتی جوڑی سب سے مقبول رہی جبکہ مشتاق احمد اور ثقلین مشتاق کی مشہور جوڑی کا فہرست میں دوسرا نمبر ہے۔

دو روز تک جاری رہنے  والی پسندیدہ آل راؤنڈر کے چناؤ کی اس مہم  کے بعد وکٹ کیپر اور مقبول ترین ٹیسٹ کپتان کی مہم کا آغاز کیا جائے  گا۔

زیادہ پڑھی جانے والی کرکٹ