میری نظریں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ پر ہیں: افتخار احمد

افتخار نے خود پر ہونے والی تنقید کے حوالے سے کہا کہ انہیں ’اس سے پریشانی نہیں بلکہ مزید محنت کی ترغیت ملتی ہے۔‘

افتخاراحمد نے 2018 میں ٹائٹل جیتنے والی اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم کی طرف سے ڈیبیو کیا تھا (اے ایف پی)

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے چھٹے سیزن میں ایک مرتبہ پھر اسلام آباد یونائیٹڈ کا حصہ بننے والے آل راؤنڈر افتخار احمد کا کہنا ہے کہ ان کی نظریں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ پر مرکوز ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ وہ رواں سال ہونے والے آئی سی سی  ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں عمدہ کارکردگی کے لیے پرعزم ہیں۔ افتخار نے 2018 میں ٹائٹل جیتنے والی اسلام آباد یونائیٹڈ کی طرف سے ڈیبیو کیا تھا، جس کے بعد وہ کراچی کنگز کا حصہ بنےاور اب پھر سے دو مرتبہ کی چیمپیئن اسلام آباد کا حصہ بن گئے ہیں۔

خود پر تنقید کے حوالے سے افتخار کا کہنا تھا کہ انہیں ’تنقید سے پریشانی نہیں بلکہ مزید محنت کی ترغیت ملتی ہے۔‘ پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری ہونے والے انٹرویو میں انہوں نے ٹیم میں اپنے کردار کے حوالے سے کہا کہ مڈل آرڈر بیٹسمین کا رول گیم کو طول دینا اور اچھے انداز میں فنش کرنا ہوتا ہے۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

افتخار نے کہا کہ وہ ہمیشہ اپنی اچھی کارکردگی سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔

رواں سال لیگ میں افتخار اپنے پہلے میچ میں صرف ایک رن ہی بنا سکے تھے۔ تاہم دوسرے میچ میں انہوں نے متاثرکن کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ انہوں نے 49رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیل کر کراچی کنگز کو شکست سے دوچار کیا تھا۔

وہ پشاور زلمی کے خلاف میچ میں دیگر بلے بازوں کی طرح بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے تھے اور صرف سات رنز ہی سکور کر سکے۔

زیادہ پڑھی جانے والی کرکٹ