بروس ولس کے ’ڈیجیٹل ٹوئن‘ کے حقوق ڈیپ فیک کمپنی کو فروخت

ہالی وڈ سٹار نے امریکی کمپنی ڈیپ کیک کو مستقبل کے منصوبوں میں ڈیپ فیک ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے ایسی ہی تخلیق استعمال کرنے کی اجازت دی ہے۔

بروس ولس نو جنوری، 2019 کو وسطی لندن میں گلاس کے یورپی پریمیئر کے لیے آمد پر پوز دیتے ہوئے (اے ایف پی)

مشہور امریکی ایکشن ہیرو بروس ولس اپنے ’ڈیجیٹل ٹوئن‘ کی تخلیق کے حقوق ایک ڈیپ فیک کمپنی کو بیچنے والے پہلے ہالی وڈ سٹار بن گئے۔

دی ٹیلی گراف کی ایک خبر کے مطابق 67 سالہ اداکار نے امریکی کمپنی ڈیپ کیک کو مستقبل کے منصوبوں میں ڈیپ فیک ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے ایسی ہی تخلیق استعمال کرنے کی اجازت دے دی۔

گذشتہ ماہ یہ اعلان کیا گیا تھا کہ بروس ولس کو افیسیا بیماری کا سامنا ہے، جس کی وجہ سے بولنے اور سننے جیسی صلاحیتیں ختم ہو جاتی ہیں۔

بروس ولس، جنہوں نے اپنی بیماری کی وجہ سے اداکاری چھوڑنے کا فیصلہ کیا تھا، اس معاہدے کی بدولت سکرینز پر بدستور نظر آتے رہیں گے۔

مشہور اداکار نے گذشتہ سال اسی کمپنی کو ایک کمرشل میں اپنا چہرہ استعمال کرنے کی اجازت دی تھی۔

ڈیپ کیک کمپنی کے ذریعے تخلیق کردہ ڈیجیٹل جڑواں روس میں مقیم آپریٹر اور انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والے میگافون کے اشتہار میں استعمال کیا گیا تھا۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

میگافون کی ویب سائٹ پر شیئر کیے گئے بیان میں مشہور اداکار نے کہا کہ انہیں کمرشل میں نظر آنے والا کردار پسند آیا اور اس تجربے کے بارے میں درج ذیل بیان دیا۔

’جدید ٹیکنالوجی کی ترقی کے ساتھ، میں دوسرے براعظم میں رہتے ہوئے بھی رابطے میں رہنے، کام کرنے اور شوٹنگ میں حصہ لینے کے قابل ہوا۔

’یہ ایک بہت نیا اور دلچسپ تجربہ ہے۔ ہماری پوری ٹیم کا شکریہ۔‘

ڈیپ فیک ٹیکنالوجی ایک دوسرے شخص پر تصویر لگا کر ویڈیوز میں لوگوں کے بصری اور سننے والی ’ڈبل‘ کو استعمال کرنا ممکن بناتی ہے۔

اس ٹیکنالوجی کو حال ہی میں سٹار وار میں استعمال کیا گیا۔

پہلے پہل صرف خطرناک سٹنٹس کے لیے ڈبل استعمال ہوتے تھے لیکن اب ٹیکنالوجی نے یہ مشکل آسان کر دی ہے۔

زیادہ پڑھی جانے والی فن