گلیکسی فولڈ کی لانچ موخر کیوں؟

سام سنگ نے گلیکسی فولڈ فونز کی سکرینوں میں مسائل کی شکایات پر لانچنگ موخر کر دی۔

تصویر بشکریہ ٹوئیٹر / مارک گرمن

ٹیکنالوجی کمپنی سام سنگ نے اپنے نئے اور اچھوتے ڈیزائن کے گلیکسی فولڈ فون کی لانچ موخر کرنے کا اعلان کیا ہے۔

سام سنگ نے باضابطہ لانچ سے پہلے1980 ڈالرز مالیت کے مہنگے کئی گلیکسی فولڈ فون ٹیسٹنگ کے لیے ٹیک ماہرین کو دیے تھے لیکن ان سیٹس میں سکرین کے مسائل سوشل میڈیا پر سامنے آنے لگے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق سام سنگ نے پیر کو جاری ایک بیان میں بتایا : ’ ٹیک ماہرین سے موصول ہونے والی شکایات کے بعد لانچنگ کو موخر کر دیا گیا ہے ۔ ماہرین کے مطابق ہینڈ سیٹس کو مزید بہتر بنانے کی ضرورت ہے‘۔

 سام سنگ کی جانب سے جلد ہی لانچ کی نئی تاریخ کا اعلان کیا جائے گا۔

ابتدائی جانچ کے دوران ہینڈ سیٹس کے اوپری اور نچلے حصوں کو دباؤ برداشت کرنے کے حوالے سے کمزور پایا گیا تھا۔ایک موقع پر گلیکسی فولڈ فون کے اندر نامعلوم مواد بھی پایا گیا جس سے فون کا ڈسپلے متاثر ہو رہا تھا۔

 سام سنگ کا کہنا ہے: ’ہم ڈسپلے کی حفاظت یقینی بنانے کے لیے اقدامات اٹھا رہے ہیں۔ ڈسپلے کو مزید محفوظ بنانے کے لیے حفاظتی لئیر سمیت مختلف آپشنز پر غور کیا جا رہا ہے‘۔

سام سنگ فولڈنگ فونز کی تیاری پر گزشتہ آٹھ سال سے کام کر رہی ہے جو کمپنی کی جانب سے سمارٹ فونز میں مزید جدت لانے کی مہم کا حصہ ہے۔

 ٹیکنا لوجی تجزیہ کار روب انڈریل کا کہنا ہے کہ سام سنگ نے ماہرین کو صرف بیٹا ڈیوائس فراہم کی تھیں۔ سام سنگ جیسی بڑی کمپنی اس صورتحال سے بچ سکتی تھی۔ ایسی ڈیوائس کی لانچ میں ناکامی کمپنی کی بدنامی کے ساتھ ساتھ خریداروں کو دوسری کمپنیوں کی جانب بھی دھکیل سکتی ہے۔

’یہ سام سنگ کے لیے نا قابل بیان حد تک نقصان دہ ہو سکتا ہے اور اس صورتحال سے تیزی سے ابھرتی حریف کمپنی ہواوے کو فائدہ ہو گا۔‘

زیادہ پڑھی جانے والی ٹیکنالوجی