یورو کپ فائنل: اٹلی سے شکست پر برطانوی مداح نالاں، 45 گرفتار

یورو کپ 2020 کے فائنل میں اٹلی کے ہاتھوں شکست کے بعد انگلینڈ کے تین سیاہ فام کھلاڑیوں کو نسلی تعصب پر مبنی تنقید کا سامنا ہے اور لندن میٹرو پولیٹن پولیس سوشل میڈیا پر گردش کرنے والے ان ’نسل پرستانہ اور توہین آمیز‘ پیغامات کی تحقیقات کر رہی ہے۔

پنلٹی شوٹ آؤٹ کے مرحلے کے دوران یہ انگلینڈ کی مسلسل تیسری شکست تھی(فوٹو: اے ایف پی)

یورو کپ 2020 میں اٹلی کے ہاتھوں شکست کے بعد انگلینڈ کے تین سیاہ فام کھلاڑیوں کو نسلی تعصب پر مبنی تنقید کا سامنا ہے جبکہ برطانوی پولیس کے مطابق میچ میں انگلینڈ کی ہار کے بعد دونوں ٹیموں کے مداحوں کے درمیان ہونے والی ہاتھا پائی کے بعد 45 افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

ان واقعات میں 19 پولیس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی تصدیق بھی کی گئی ہے۔

دوسری جانب فائنل میں انگلینڈ کو شکست دینے پر اٹلی میں مداحوں کا جشن جاری ہے اور روم سمیت ملک کے مختلف شہروں میں شہری رات دیر تک اپنی ٹیم کی فتح کا جشن مناتے رہے۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کے مطابق اتوار کی رات ویمبلے سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے یورو کپ 2020 کے فائنل کے دوران مقررہ وقت میں میچ 1-1 گول سے برابر رہنے کے بعد جب پنلٹی شوٹ آؤٹ کا مرحلہ آیا تو اس میں انگلینڈ کے تین سیاہ فام کھلاڑی اپنی پنلیٹیز پر گول سکور نہ کرسکے۔

ان کھلاڑیوں میں 19 سالہ بوکایو ساکا سمیت مارکوس ریش فورڈ اور جاڈون سانچو شامل ہیں۔

انگلش فٹ بال ایسوسی ایشن نے ان کھلاڑیوں کے خلاف استعمال کی جانے والی زبان پر ایک مذمتی بیان بھی جاری کیا ہے۔

 فٹ بال ایسوسی ایشن کے مطابق انہیں ان کھلاڑیوں کے خلاف استعمال کی جانے والی زبان سے ’شدید رنج‘ پہنچا ہے۔

 

لندن میٹرو پولیٹن پولیس کا کہنا ہے کہ وہ سوشل میڈیا پر گردش کرنے والے ان ’نسل پرستانہ اور توہین آمیز‘ پیغامات کے حوالے سے تحقیق کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ یہ پنلٹی شوٹ آؤٹ کے مرحلے کے دوران انگلینڈ کی مسلسل تیسری شکست تھی۔

دوسری جانب یورو کپ کے فائنل کے بعد برطانوی اور اطالوی ٹیم کے مداحوں کے درمیان ہاتھا پائی کی بھی اطلاعات ہیں۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق سوموار کو برطانوی پولیس کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ اتوار کو اٹلی اور برطانیہ کے فائنل کے بعد ویمبلے سٹیڈیم کے قریب موجود پرتشدد مداحوں کا سامنا کرتے ہوئے پولیس کے 19 اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

لندن پولیس کا کہنا تھا کہ انہوں نے ان واقعات میں ملوث 45 افراد کو گرفتار بھی کیا ہے۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

فائنل میں اٹلی کی فتح پر برطانوی شاہی خاندان کے رکن شہزادہ ولیم نے اطالوی ٹیم کو مبارک باد دی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ برطانوی کھلاڑیوں کو اپنی کوشش پر ’فخر‘ ہونا چاہیے۔

یورو کپ کا فائنل جیتنے پر اٹلی کو چار کروڑ 40 لاکھ ڈالر کی انعامی رقم سے نوازا گیا ہے جب کہ شکست کا سامنا کرنے والی برطانوی ٹیم کو بھی تین کروڑ 60 لاکھ کی انعامی رقم ملی ہے۔

زیادہ پڑھی جانے والی فٹ بال