برٹ ایوارڈز: خواتین کی کامیابیوں کا سفر جاری

جنس کی بنیاد پر کیٹگریز کے بغیر برٹ ایوارڈز کے افتتاحی سال میں ہی، خواتین کا غلبہ رہا، اور ایڈیل نے تین ایوارڈ حاصل کیے۔

برطانوی گلوکارہ ایڈیل آٹھ فروری کو لندن میں برٹ ایوارڈز 2022 کے لیے پہنچنے پر ریڈ کارپٹ پر پوز دے رہی ہیں (اے ایف پی)

’سمون لائک یو‘ کی اپنی پہلی پرفارمنس سے سامعین کو مسحور کرنے کے گیارہ سال بعد، برطانوی گلوکارہ ایڈیل نے ایک بار پھر برطانیہ کی ملکہ کے طور پر خود کو ثابت کر دیا ہے۔

آرٹسٹ نے O2 ایرینا میں برٹ ایوارڈز کی اس سال کی تقریب میں تین ایوارڈز اپنے نام کیے، جن میں آرٹسٹ آف دا ایئر اور سال کا بہترین البم کا انعام شامل ہے۔ اب وہ واحد سولو آرٹسٹ بھی ہیں جنہوں نے تین بار البم آف دا ایئر جیتا ہے – صرف بینڈ کولڈ پلے اور آرکٹک مونکیز ان کے برابر پہنچے ہیں۔

جنس کی بنیاد پر کیٹگریز کے بغیر برٹ ایوارڈز کے افتتاحی سال میں ہی، خواتین کا غلبہ رہا، اس بات کے باوجود کہ جن لوگوں نے پیش گوئی کی کہ یہ نمائندگی میں ایک قدم پیچھے ہٹ جانا ہوگا۔

ایڈیل کی جیت کے ساتھ ساتھ، بہترین انعامات حاصل کرنے والے دیگر فنکاروں میں ریپر لٹل سمز بھی شامل تھیں، جنہوں نے بہترین نئے آرٹسٹ کا ایوارڈ حاصل کیا ۔ اپنی والدہ کو اپنے ساتھ سٹیج پر لاتے ہوئے، شمالی لندن کی فنکارہ نے ایک طاقتور تقریر کی جس میں انہوں نے اپنے پس منظر کی بھی بات کی اور آنے والی نسلوں کو اپنے خوابوں کو پورا کرنے کی ترغیب دی۔

لینڈ گلوکارہ ایلی روسیل کے بینڈ وولف ایلس نے آرکٹک منکیز اور فوالز جیسے راک بینڈز کے نقش قدم پر چلتے ہوئے، بہترین گروپ کا انعام اپنے نام کیا۔

بلی ایلش نے بین الاقوامی آرٹسٹ کا ایوارڈ حاصل کیا۔ وہ پہلے دو سال تک بہترین بین الاقوامی خاتون آرٹسٹ کا اعزاز حاصل کرچکی ہیں۔  پہلے سے ریکارڈ شدہ پیغام میں انہوں نے کہا: ’میرے لیے یہ اعزاز کی بات ہے اور خود کو خوش قسمت سمجھتی ہوں کہ مجھے دوبارہ یہ اعزاز ملا ہے۔ میں اپنے آپ کو مستحق محسوس نہیں کرتی۔‘

انہوں نے اس سال کے گلاسٹنبری فیسٹیول سے پہلے اپنے جوش کا اظہار بھی کیا ہے۔

نئے متعارف کرائی گئی کیٹگری میں، بیکی ہل نے بہترین ڈانس ایکٹ ایوارڈ لیا اور ایک آنسووں سے بھری تقریر کی جس میں انہوں نے اپنے ساتھی امیدواروں کا شکریہ ادا کیا، جن میں ہیوی ویٹ کیلون ہیرس اور فریڈ اگین بھی شامل تھے۔

لٹل سمز کی تقریر کی بازگشت ڈیو نے بھی سنائی، جنہوں نے ہپ ہاپ/گرائم/ریپ کیٹیگری میں جیتا اور بتایا کہ کس طرح پہلے وسیع میوزک انڈسٹری میں ریپ کو ایک صنف کے طور پر بدنام کیا جاتا تھا۔؎

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

بعد میں ایڈیل نے آرٹسٹ آف دا ایئر جیت کر رات کے سب سے بڑے انعامات میں سے ایک کے ساتھ دوبارہ فتح حاصل کی۔ دل کو چھو لینے والی تقریر میں، انہوں نے برطانیہ کے باصلاحیت نوجوان فنکاروں بشمول برٹ جیتنے والی لٹل سمز اور ڈیو کی تعریف کی۔ ’میں لٹل سمز کو بہت زیادہ مبارک باد دینا چاہتی ہوں۔ میرے پاس آپ کے لیے بہت پیار ہے۔‘

انہوں نے مزید کہا: ’ڈیو، ایڈ، سیم، مجھے آپ کی کمپنی میں ہونے پر بہت فخر ہے۔ مجھے ایک فنکار بننا پسند ہے، میں واقعی پسند کرتی ہوں اور میں حقیقی طور پر یقین نہیں کر سکتی کہ یہ میرا کام ہے۔

’اور حقیقی فنکاری، میں جانتی ہوں کہ میں نے اس کے بارے میں پہلے بھی بات کی ہے، لیکن یہاں بہت سے نئے فنکار ہیں۔ انگلینڈ، یوکے، ہمارے پاس بہت سارے ناقابل یقین نئے نوجوان فنکار آ رہے ہیں۔ کبھی بھی اس بات کو مت بھولنا کہ آپ جو ہیں وہ کیوں ہیں۔ لوگوں کے آپ کے ساتھ ہونے کی وجہ یہ ہے کہ آپ میں کچھ ہے۔ اسے کبھی مت جانے دیں۔‘

انہوں نے اختتام میں کہا: ’اور یہ بھی، میں سمجھتی ہوں کہ اس ایوارڈ کا نام کیوں بدل گیا ہے لیکن مجھے واقعی ایک عورت اور ایک خاتون فنکار ہونا پسند ہے۔ مجھے واقعی ہم پر فخر ہے۔‘

ایڈیل نے آرٹسٹ آف دا ایئر کا ایوارڈ  اپنے چارٹ ٹاپنگ چوتھے سٹوڈیو البم ’30‘  کے گانے ’آئی ڈرنک وائن‘ کی پرفارمنس کے بعد جیتا، جس کے لیے انہیں میزبان مو گلیگن نے ’برٹس کی غیرمتنازع ملکہ‘ کے طور پر متعارف کرایا۔

ایڈ شیران ان تمام ایوارڈز سے محروم رہے جن کے لیے انہیں نامزد کیا گیا تھا، لیکن پھر بھی وہ خالی ہاتھ گھر نہیں گئے۔ سیریز ’سکسیش‘ کے سٹار برائن کاکس نے حیرت انگیز طور پر شیران کو سال کے بہترین نغمہ نگار کا ایوارڈ  پیش کیا، جو آج تک ان کا ساتواں برٹ ایوارڈ ہے۔

’آپ کا بہت بہت شکریہ،‘ 30 سالہ نوجوان نے اپنے شریک مصنفین اور لیبل اٹلانٹک ریکارڈز کو پکارتے ہوئے کہا۔ انہوں نے اپنی اہلیہ شیری سیبورن کا شکریہ ادا کرنے کے لیے ایک لمحہ لیا اور آنے اور ان کے گانوں کو سننے اور ان کی حمایت کا اظہار کرنے کے لیے شکریہ ادا کیا۔ اس کے بعد انہوں نے اپنے تازہ ترین چارٹ ٹاپنگ البم، ’= (ایکولز)‘ سے اپنے گانا ’جوکر اینڈ دا کوئین‘ پیش کیا جبکہ سٹرنگ سیکشن نے مدد کی۔

جب ایوارڈ پیش کرنے والوں کی بات آئی، تو ناظرین سٹیج پر اور اس سے باہر بظاہر بے ترتیب دستے کی موجودگی سے حیران تھے۔ ڈائیونگ چیمپیئن ٹام ڈیلی سے لے کر انگلش فٹبالر ایان رائٹ، مو فرح اور ڈاکٹر ہو سٹار جوڈی وئٹیکر تک، بہت سے لوگوں کا عملی طور پر ان انعامات سے کوئی تعلق نہیں ہے جو وہ پیش کر رہے تھے – یا واقعی موسیقی کی صنعت سے کوئی تعلق نہیں۔

بہت سے لوگوں نے یہ بھی نوٹ کیا کہ جیک وائٹ ہال کے مسلسل چار سال برٹس کی میزبانی کے بعد، گلیگن پہلی بار میزبانی کے دوران کنفیوزڈ نظر آئے۔ وہ وائٹ ہال کی طرح محضوض نہ کر پائے، اور انہوں نے وائٹ ہال کی اپنے مشہور مہمانوں کا مذاق اڑانے کی عادت کے مقابلے میں دوستانہ انداز اپنایا۔

رات کا آخری اور سب سے بڑا ایوارڈ ایڈیل کو دیا گیا، جہوں نے اپنے سابق شوہر سائمن کونیکی اور بیٹے اینجلو کے ساتھ پروڈیوسر انفلو کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان کے البم آف دا ایئر، 2021 کے ’30‘ پر ان کے ساتھ کام کیا۔

شام کا اختتام ڈیو نے ایک غیر معمولی پرفارمنس کے ساتھ کیا جنہوں نے سٹیج پر اپنے ساتھی ریپرز کو مدعو کیا، بشمول فریڈو، گِگس اور گیٹس، اور ان کا ساتھ ایک گوسپل کوئر نے دیا۔

یہ ان نایاب ایوارڈ شوز میں سے ایک ہے جہاں، زیادہ تر حصے کے لیے، ہر ایک کو وہ اعزاز ملے جن کے وہ مستحق تھے۔

© The Independent

زیادہ پڑھی جانے والی موسیقی