فٹ بال کے فروغ کے لیے پاکستان، سعودی عرب میں مفاہمتی یادداشت

پاکستان فٹ بال فیڈریشن (پی ایف ایف) کی نارملائزیشن کمیٹی (این سی) کے چیئرمین ہارون ملک نے سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن (ایس اے ایف ایف) کے صدر یاسر المسحل کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کیے ہیں۔ 

پی ایف ایف کے چیئرمین ہارون ملک اور سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن کے صدر یاسر المسحل ایم او یو پر دستخط کرتے ہوئے (پاکستان فٹ بال فیڈریشن)

پاکستان اور سعودی عرب کی فٹ بال ایسوسی ایشنز نے ہفتے کو مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کیے ہیں، جس کا بنیادی مقصد دونوں فیڈریشنوں میں فٹ بال کے باہمی فائدے ، فروغ ، ترقی اور کامیابی کے لیے مضبوط تعلقات کو فروغ دینا ہے۔

پاکستان فٹ بال فیڈریشن (پی ایف ایف) کی نارملائزیشن کمیٹی (این سی) کے چیئرمین ہارون ملک نے سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن (ایس اے ایف ایف) کے صدر یاسر المسحل کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کیے ہیں۔ 

پاکستان فٹ بال فیڈریشن کےمطابق اس اہم موقع پر ایس اے ایف ایف کے جنرل سیکریٹری ابراہیم القاسم اور نیشنل کانفرنس کے رکن سعود ہاشمی بھی موجود تھے۔ یہ ایم او یو پاکستانی فٹ بال کے لیے ایک تاریخی سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ یہ معاہدہ چیئرمین ہارون ملک کی سربراہی میں نیشنل کانفرنس کی چھ ماہ کی مخلصانہ کوششوں کے بعد عمل میں آیا ہے۔

ایم او یو کا مقصد پاکستان فٹ بال فیڈریشن (پی ایف ایف) اور سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن (ایس اے ایف ایف) کے درمیان مشترکہ فریم ورک قائم کرنا ہے۔ بنیادی مقصد دونوں فیڈریشنوں میں فٹ بال کے باہمی فائدے ، فروغ ، ترقی اور کامیابی کے لیے مضبوط تعلقات کو فروغ دینا ہے۔

دونوں فیڈریشنز 2024 کے لیے ایک جامع کیلنڈر پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہیں جس میں خواتین کی قومی ٹیم اور مردوں کی یوتھ قومی ٹیموں پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔ اس کا مقصد سعودی عرب یا پاکستان میں دوستانہ میچز کھیلنے کے مواقع تلاش کرنا ہے، جس سے بین الاقوامی مواقع اور مسابقتی تجربے میں اضافہ ہو گا۔ وہ اپنے متعلقہ کھیلوں کے محکموں کے مابین ورچوئل کالز کو مربوط کرنے کا عہد کرتے ہیں۔ اس ایکسچینج میں مارکیٹنگ، ریفریز، وی اے آر، ویمنز فٹ بال، یوتھ فٹ بال، اسپورٹس سائنس اور فٹ بال سے متعلق ٹیکنالوجیز کا احاطہ کیا جائے گا۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

نیشنل کانفرنس کے چیئرمین ہارون ملک نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں ایم او یو پر سعودی فیڈریشن کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں اور پاکستان میں فٹ بال کی بہتری کے لیے ان کی بھرپور حمایت کرتا ہوں۔ یہ ایک اہم سنگ میل ہے کیونکہ سعودی عرب پاکستان فٹ بال کے ساتھ پہلی شمولیت اختیار کر رہا ہے۔ یہ واقعی ہمارے ملک میں فٹ بال کے مستقبل کو نئی شکل دینے کے لیے ہے۔

اس موقع پر نیشنل کانفرنس کے رکن سعود ہاشمی نے کہا ’سعودی فیڈریشن نے فٹ بال کے نظام اور بنیادی ڈھانچے میں بہت اہم سرمایہ کاری کی ہے۔ وہ پاکستان میں فٹ بال کو تیز کرنے کی پی ایف ایف کی ضرورت کو تسلیم کرتے ہیں اور ہمارے لیے ان کی خیر سگالی پاکستان کو آنے والے سالوں تک فائدہ پہنچائے گی۔ ہم پی ایف ایف میں ان کے بہترین طریقوں کو شامل کرنے کے منتظر ہیں۔‘

زیادہ پڑھی جانے والی فٹ بال