سوات کے بعد پنجاب کے بھی کئی اضلاع میں سیلاب کا خطرہ

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پی ڈی ایم اے کے مطابق ابھی تک پنجاب میں صرف بیٹ کے علاقے زیر آب آئے ہیں۔

پاکستان میں حالیہ بارشوں کے باعث خیبر پختونخوا کی طرح پنجاب کے بھی کئی اضلاع میں سیلاب کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔

بالائی علاقوں سے آنے والے پانی سے دریائے سندھ میں اونچے درجے کا سیلاب جبکہ چناب، جہلم اور دریائے راوی میں درمیانے درجے کا سیلاب ریکارڈ کیا گیا ہے۔ اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی پنجاب نے الرٹ جاری کر دیے ہیں۔

ضلع راجن پور رود کوہیوں کے باعث سیلابی پانی سے متاثر ہونے کا بھی خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے پی ڈی ایم اے کے مطابق ابھی تک پنجاب میں صرف بیٹ کے علاقے زیر آب آئے ہیں۔ لیکن اگر ’خیبر پختونخوا کی سائیڈ سے زیادہ پانی دریاؤں میں داخل ہوا اور بارشیں نہ تھمیں تو کئی شہروں کو خطرہ ہوسکتا ہے۔‘

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

ڈائریکٹر پی ڈی ایم اے طارق مسعود نے انڈپینڈنٹ اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال میں دریائے سندھ میں پانی کی سطح مسلسل بڑھ رہی ہے، ’جس کی وجہ سے مظفر گڑھ، لیہ، ڈیرہ غازی خان اور راجن پور میں سیلاب کا خطرہ ہوسکتا ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ دریائے چناب میں پانی زیادہ ہونے سے جھنگ، ملتان اور خانیوال کے قریبی علاقے بھی زیر آب آسکتے ہیں۔ ’دریائے سندھ اور چناب سے بیٹ کے کئی علاقے زیر آب آچکے ہیں جہاں امدادی کیمپ لگا دیے گئے ہیں۔‘ ان علاقوں میں سیلاب سے متاثرہ افراد کو امداد دی جا رہی ہے۔

زیادہ پڑھی جانے والی پاکستان