نئے کرونا ایس او پیز کا نفاذ اگلے 48 گھنٹوں میں: این سی او سی

آج ہونے والے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر اجلاس میں تعلیمی اداروں کو کھلے رکھنے پر تبادلہ خیال کیا گیا تاہم بند کرنے کے حوالے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا، اس حوالے سے فیصلہ کرنے سے قبل تعلیمی اداروں میں مثبت کیسز کی شرح کا جائزہ لیا جائے گا۔

25 نومبر 2020 کو لی گئی اس تصویر میں ایک رضاکار کووڈ 19 کے لیے چینی ساختہ  ویکسین لگانے کے بعد روانہ ہو رہا ہے (فائل تصویر: اے ایف پی)

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی)  کے آج ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ کرونا کی نئی لہر کے پیش نظر صوبوں کے اتفاق رائے سے نئے ضابطوں(ایس او پیز) کا نفاذ آئندہ 48 گھنٹوں میں کردیا جائے گا۔

این سی او سی نے کرونا وائرس کی پانچویں لہر کے پیش نظر تعلیمی اداروں کی بندش سے متعلق فیصلہ مؤخر کرتے ہوئے کہا کہ یہ فیصلہ کیسز کی مثبت شرح کو دیکھ کر کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر برائے ترقی و منصوبہ بندی اسد عمر کی زیرصدارت آج این سی او سی کا اجلاس ہوا جس میں ویکسینیشن کا عمل تیزکرنے پراتفاق کیا گیا جب کہ اجلاس میں پی ایس ایل کے دوران شائقین کی تعداد سمیت دیگراقدامات پر پی سی بی سے رائے بھی طلب کی گئی۔

آج ہونے والے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر اجلاس میں تعلیمی اداروں کو کھلے رکھنے پر تبادلہ خیال کیا گیا تاہم بند کرنے کے حوالے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا، اس حوالے سے فیصلہ کرنے سے قبل تعلیمی اداروں میں مثبت کیسز کی شرح کا جائزہ لیا جائے گا۔

اجلاس میں وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود، میجر جنرل محمد ظفر اقبال اور صوبائی وزرا سمیت این سی اوسی حکام نے شرکت کی۔ کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز پر حالات کا جائزہ لینے کے لیے کل پھر اجلاس طلب کیا گیا ہے، جس میں کرونا وائرس کے اعداد شمارسمیت تمام حالات کا ازسرنو جائزہ لیا جائے گا۔

قبل ازیں این سی او سی نے 17 جنوری 2022 سے ہوائی سفر میں کھانے اور ناشتے پر مکمل پابندی نافذ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ بیان کے مطابق سول ایوی ایشن سے کہا گیا کہ وہ پرواز کے اندر ماسک پہننے کو یقینی بنائے اور تمام ہوائی اڈوں پر کرونا ایس او پیز کو بھی نافذ کرے۔ این سی او سی نے بیان میں کہا تھا کہ پبلک ٹرانسپورٹ میں بھی کھانے اور ناشتے کی فراہمی پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پاکستان میں وائرس سے چار ہزار 340 افراد متاثر ہوئے اور سات اموات واقع ہوئیں۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران وائرس کی تشخیص کے لیے 49 ہزار 809 ٹیسٹ کیے گئے جس کے نتیجے میں کورونا کیسز مثبت آنے کی شرح 8.71 ہوگئی۔

اس وقت پاکستان میں کرونا وائرس کے 35 ہزار 982 فعال کیسز موجود ہیں جن میں سے 781 کی حالت تشویشناک ہے۔

کرونا وائرس کے نئے ویرینٹ کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر حکومت نے 18 سال سے زائد عمر افراد کو مکمل ویکسین لگوانے کے بعد بوسٹر شارٹ لگانے کی اجازت دی ہے جب کہ حکومت کی جانب سے ایس اور پیز پر مکمل عمل درآمد اور ویکسینیشن کی سخت تنبیہ کی گئی ہے۔

زیادہ پڑھی جانے والی پاکستان