ہو سکتا ہے ملٹری ہسپتال ماسک پہن کر جاؤں: صدر ٹرمپ

کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد سے اب تک کبھی ماسک نہ پہننے والے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ہو سکتا ہے وہ ملٹری ہسپتال کا دورہ کرتے ہوئے ماسک پہنیں۔

صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ انہیں ماسک پہننے سے کوئی مسئلہ نہیں (روئٹرز)

کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد سے اب تک کبھی ماسک نہ پہننے والے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ہو سکتا ہے وہ ملٹری ہسپتال کا دورہ کرتے ہوئے ماسک پہنیں گے۔

جب سے کرونا وائرس کی وبا پھیلنا شروع ہوئی ہےامریکی صدر کو ماسک پہنے نہیں دیکھا گیا ہے۔ وہ اب تک عوامی مقامات پر بھی ماسک کو ترک کرتے ہی دکھائی دیے ہیں۔

تاہم اب انہوں نے جمعرات کو کہا ہے کہ واشنگٹن سے باہر والٹر ریڈ نیشنل ملٹری میڈیکل سینٹر کا دورہ کرتے ہوئے ہو سکتا ہے کہ وہ ماسک پہنیں۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فاکس نیوز کو دیے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ ’ہو سکتا ہے کہ میں جب والٹر ریڈ جاؤں تو ماسک پہنوں۔ آپ ہسپتال کے ماحول میں ہوں گے۔ میرے خیال میں یہ بالکل صحیح ہوگا۔‘

انہوں نے کہا کہ ’مجھے ماسک پہننے سے کوئی مسئلہ نہیں ہے۔‘

انہوں نے اپنے دورے کے حوالے سے کہا کہ وہ زخمی فوجیوں کے ساتھ ساتھ کرونا وائرس کو روکنے کے لیے کام کرنے والے فرنٹ لائن ورکرز سے ملیں گے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق صدر ٹرمپ نے یہ نہیں بتایا کہ وہ یہ دورہ کب کریں گے اور نہ ہی اس حوالے سے وائٹ ہاؤس کی جانب سے کوئی بیان سامنے آیا ہے، لیکن سی این این نے نے رپورٹ کیا تھا کہ صدر ٹرمپ سنیچر کو ملٹری ہسپتال کا دورہ کریں گے۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

خیال رہے کہ امریکہ میں کرونا وائرس کے کیسز میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے گذشتہ 24 گھنٹوں میں ریکارڈ 65 ہزار نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ اس دوران ایک ہزار افراد کی ہلاکت بھی ہوئی ہے۔

جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ زیادہ کیسز کی وجہ زیادہ ٹیسٹس ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ’کیسز کی تعداد اس لیے زیادہ ہے کیونکہ دیگر ممالک کے مقابلے میں ہمارے ملک میں زیادہ ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں۔‘

جبکہ امریکہ میں وبائی امراض کے ماہر انتھونی فاؤچی نے کہا ہے کہ ’ہم بہت مشکل اور چیلنجنگ وقت سے گزر رہے ہیں۔ٗ

انہوں نے کہا کہ ’میرا خیال نہیں کہ ہمیں سب کچھ پہلے کی طرح بند کر دینا چاہیے لیکن ریاستوں کو کھولنے میں تھوڑا وقفہ لینا چاہیے۔‘

زیادہ پڑھی جانے والی امریکہ