سعودی عرب: خواتین فوجی کیڈیٹس کا پہلا دستہ

سعودی عرب کی فوج میں شامل خواتین کا پہلا دستہ چار ماہ کی ٹریننگ کے بعد گریجویٹ ہو گیا ہے۔

مئی میں شروع ہونے والی 14 ہفتوں کی ٹریننگ کے بعد سعودی عرب کی پہلی خواتین فوجی بدھ کو آرمڈ فورسز ویمنز کیڈر ٹریننگ سیںٹر سے گریجویٹ ہوگئیں۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق اس موقع پر تقریب پر آرمڈ فورسز ایجوکیشن اینڈ ٹریننگ اتھارٹی کے سربراہ میجر جنرل عادل البلاوی نے خطاب میں کہا: ’اس سینٹر کا خاص مشن ہے جس کا مقصد اعلیٰ ٹریننگ پروگرام، نصاب اور سیکھنے کے لیے بہترین ماحول فراہم کرنا ہے۔‘

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

انہوں نے مزید کہا کہ یہ ٹریننگ سینٹر بین الاقوامی معیار کے مطابق پروگرام فراہم کرتا ہے جو خواتین بھرتیوں کی ضروریات کو پورا کرتے ہیں۔ ’اس کا مقصد مجموعی کارکردگی کو بہتر بنانا ہے، جو مستقبل میں وزارت کے مقاصد کو حاصل کرنے میں مددگار ثابت ہوگا۔‘

ویمنز ٹریننگ سینٹر کے قائم مقام کمانڈر چیف سارجنٹ سلیمان الملکی کے مبارک بادی کے پیغام کے بعد اسسٹنٹ کمانڈر ہادی العنیزی نے گریجویٹس سے حلف لیا۔

بیچ کے امتحان کے نتائج کا بھی اعلان کیا گیا، اور بہترین کارکردگی والی گریجویٹس کو بھی انعامات سے نوازا گیا۔

سعودی عرب نے رواں سال فروری میں خواتین کے لیے فوج میں بھرتی شروع کی۔

زیادہ پڑھی جانے والی ملٹی میڈیا