امریکہ میں ایک گھر سے مردہ شخص اور 124 سانپ برآمد

میری لینڈ پولیس کے مطابق ایک پڑوسی کی رپورٹ پر وہ ایک شہری کے گھر پہنچے تو انہیں مردہ پایا اور گھر میں مختلف اقسام کے سو سے زائد زہریلے اور غیر زہریلے ساپنے ملے۔

16 ستمبر 2021 کی تصویر میں  ایک  پالتو ریٹی کیولیٹڈ پائتھن سانپ  کو دیکھا جاسکتا ہے۔ امریکہ میں ایک شہری کے گھر سے سو سے زائد سانپ برآمد ہوئے ہیں (فائل فوٹو: اے ایف پی)

امریکہ کی ریاست میری لینڈ میں پولیس کو ایک گھر سے کم از کم 124 سانپ اور ایک مردہ شخص ملا ہے۔

میری لینڈ کی چارلس کاؤنٹی کے شیرف کے دفتر نے بتایا کہ جب پولیس گذشتہ بدھ کی شام چھ بجے مذکورہ شخص کے گھر پہنچی تو دیکھا کہ سانپوں کو پنجروں کے اندر رکھا گیا ہے، جن میں سے کچھ زہریلے تھے۔

پولیس کے مطابق ایک پڑوسی، جنہوں نے 49 سالہ اس شخص کو ایک دن تک نہیں دیکھا تھا، کاؤنٹی کے علاقے پومفریٹ میں رافیل ڈرائیو میں ان کے گھر گئے۔

پڑوسی نے کھڑکی سے دیکھا تو وہ شخص فرش پر بے ہوش پڑے تھے، جس کے بعد انہوں نے مدد کے لیے911 پر کال کی۔

حکام کا کہنا ہے کہ مذکورہ شخص کو مردہ قرار دے دیا گیا اور طبی معائنہ کرنے والوں نے ابھی تک موت کی وجہ کا تعین نہیں کیا ہے جبکہ ابھی تک کسی غیر قانونی کام کے واضح آثار نہیں ملے۔

شیرف کے دفتر نے بتایا کہ گھر کے اندر شیلف پر رکھے گئے ٹینکوں میں سے مختلف اقسام کے 100 سے زائد زہریلے اور غیر زہریلے سانپ ملے ہیں۔

مزید پڑھ

اس سیکشن میں متعلقہ حوالہ پوائنٹس شامل ہیں (Related Nodes field)

حکام کے مطابق ان سانپوں میں پائتھن، ریٹل سنیک، کوبرا اور بلیک ممبا شامل تھے۔

چارلس کاؤنٹی کی ترجمان جینیفر ہیرس نے بتایا کہ اینیمل کنٹرول کے حکام سانپ کی اتنی بڑی تعداد کا معائنہ کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ چیف اینیمل کنٹرول آفیسر کو 30 سال سے زیادہ عرصے کے تجربے میں ’اس طرح کی صورت حال‘ کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔

پولیس مذکورہ شخص کی موت کی بھی تحقیقات کر رہی ہے۔

این بی سی واشنگٹن نے رپورٹ کیا کہ کاؤنٹی کی ترجمان جینیفر ہیرس نے بتایا کہ چارلس کاؤنٹی اینیمل کنٹرول ان جانوروں کے متعلق امدادی کوششوں میں شمالی کیرولائنا اور ورجینیا کے رینگنے والے جانوروں کے ماہرین کے ساتھ رابطے میں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سانپوں، جنہیں رکھنے پر میری لینڈ میں پابندی ہے، کو ٹھیک طرح سے رکھا گیا تھا۔ 

ہیرس نے کہا: ’انہوں نے گھر کے اندر بہت زیادہ فرنیچر نہیں رکھا تھا، لہذا اگر کوئی سانپ فرار ہو جائے تو کوئی جگہ نہیں تھی، جہاں وہ چھپ سکتا یا کسی کو نقصان پہنچا سکتا۔‘

رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ سانپوں سے عوام کو کوئی خطرہ نہیں ہے، کیونکہ وہ  فرار ہونے کی کوشش بھی کریں تو سرد موسم سے بچ نہیں سکیں گے۔

© The Independent

زیادہ پڑھی جانے والی امریکہ